Featured Events


عطائے مغفرت

Watch Attae Maghfirat YouTube Video

رمضان المبارک کا دوسرا عشرہ بخشش کا ہے جس میں بخشش لٹائی جا رہی ہے


رمضان المبارک کا  پہلا عشرہ عطائے رحمت تھا،دوسرا عشرہ عطائے مغفرت ہے۔دیکھنا یہ چاہیے کہ میں اپنی زندگی کیسے بسر کر رہا ہوں۔ میں نے رمضان المبارک کے پہلے عشرے میں رحمت باری حاصل کرنے کے لیے کیسے اعمال اختیار کیے یا دوسرے عشرے میں بخشش کے لیے کیا تیاری کی ہے؟ہم نے دینی حصوں پر بھی دنیاکے ضابطے لاگو کر دئیے ہیں۔رمضان المبارک کی برکات پر ہماری بیٹیاں جس انداز سے ٹی وی شوز پر بیان کر رہی ہیں برکات کے ساتھ ساتھ دینی احکامات پر بھی توجہ دینے کی اشد ضرورت ہے۔یہ گمان رکھنا کہ دین اسلام کی پابندیاں شاید مشکل کھڑی کرتی ہیں ایسا نہیں ہے بلکہ زندگی کی اصل روانی دین اسلام کے مطابق زندگی بسر کرنے میں ہے۔
  امیر عبدالقدیر اعوان شیخ سلسلہ نقشبندیہ اویسیہ و سربراہ تنظیم الاخوان پاکستان کا جمعتہ المبارک کے روز خطاب
 انہوں نے کہا کہ رمضان المبارک کی عطا بہت بڑی عطا ہے۔معافی کا موقع عطا فرمایا۔اللہ کریم اپنی مخلوق سے بہت محبت فرماتے ہیں بہانے عطا فرما رہے ہیں کہ ہم سدھر جائیں ہم اپنے خالق کی بارگاہ میں لوٹ آئیں۔اس عشرے میں بخشش عام ہے،لٹائی جا رہی ہے اللہ کریم سے دین اور دنیا کی سہولت مانگیں۔اپنی کمزوریوں کی معافی مانگیں۔ہمیں اپنے اللہ کریم سے جو بندگی کا رشتہ ہے اسے سمجھنے کی ضرورت ہے۔جب دین کے ساتھ رغبت ہوگی پھر سمجھ آئے گی میرے اللہ کریم ہیں میں ان کا بندہ ہو ں پھر اس کیفیت کی سمجھ آئے گی۔
خود کو دیکھیں ہمارا اقرار اس درجہ کا نہیں کہ اعمال تک بھی پہنچے۔اللہ کریم نے ایسی ہستیاں مبعوث فرمائیں جنہوں نے اللہ کی مخلوق کی تربیت فرمائی۔آج معاشرے میں تکلیف اس لیے ہے کہ ہم نے نبی کریم ﷺ کو مانا تو ہے اختیار کرنے چھوڑ دیا ہے۔بے عملی کو عمل کی صورت لٹا نا ہو گا،تب ہی معاشرے میں بہتری آسکے گی۔اللہ کریم ہمارے حال پر رحم فرمائیں اور اس رمضان المبارک  کی برکت سے ہمیں اپنی اصلاح کرنے کی توفیق عطا فرمائیں۔
  آخر میں انہوں نے ملکی سلامتی اور بقا کی اجتماعی دعا بھی فرمائی۔
Ramadaan al mubarak ka dosra ashra bakhshish ka hai jis mein bakhshish lutai ja rahi hai - 1

رحمت الہی کا موسم

Watch Rehmat-e-Ilahi ka mausam YouTube Video

رمضان المبارک کو غنیمت جانیے اور اس کی رحمت کے طالب بنیں


 رمضان المبارک کا پہلا عشرہ ہے رحمت باری عام ہے۔کون ہے جو رحمت کا متلاشی نہ ہوگا کوئی بھی اس کی رحمت کے بغیر نہیں رہ سکتا ہر ایک کو اس کی رحمت کی ضرورت ہے۔تو یہ رمضان المبارک کا  وہ عشرہ ہے جس میں رحمت باری لٹائی جا رہی ہے۔آج ان با برکت لمحوں میں بھی اگر کوئی برائی کرتا ہے،نماز روز ہ نہیں کرتا تو اس کے پاس یہ جواز بھی نہیں رہا کہ یہ کام شیطان نے کروائے ہیں کیونکہ شیطان تو رمضان المبارک میں قید کر دئیے جاتے ہیں لیکن وہ شیطنت جو ہمارے مزاجوں میں رچ بس گئی ہے یہ اس کا پرتو ہے خود کو دیکھیں اور اپنا محاسبہ کیجیے اور روزے کا احترام کرتے ہوئے اُس تقوی کے حصول کی کوشش کیجیے جس کا حکم ہے۔
  امیر عبدالقدیر اعوان شیخ سلسلہ نقشبندیہ اویسیہ و سربراہ تنظیم الاخوان پاکستان کا جمعتہ المبارک کے روز خطاب!
 انہوں نے کہا کہ رمضان المبارک میں بھی سودی نظام چل رہا ہے۔کیا یہ بھی شیطان ہم سے کروا رہا ہے؟ہمارے اعمال ایسے ہیں کہ ہم مان رہے ہیں لیکن مانتے نہیں ہم ساری دنیا سے ملکی بہتری کے لیے معالج ڈھونڈ رہے ہیں،علاج تلاش کر رہے ہیں لیکن دین اسلام سے راہنمائی نہیں لے رہے۔اللہ کریم نے انبیاء مبعوث فرمائے مخلوق کی راہنمائی کے لیے۔جیسے سابقہ قومیں اپنی بے عملی کی وجہ سے تباہ ہوئی تھیں ہم بھی ہو رہے ہیں کیونکہ ہمارے پاس بھی اب صرف دعوی ہے عمل نہیں۔آپ ﷺ اللہ کے رسول ہیں۔سارا حق موجود ہے ظاہر ہو یا باطن۔آپ کیا چاہتے ہیں بات تو آپ کے فیصلے پر ہے۔تربیت اور راہنمائی کے لیے ہر چیز قول و فعل میں موجود ہے۔
  انہوں نے مزید کہا کہ رمضان المبارک کو غنیمت جانیے اور اس کی رحمت کے طالب بنیں۔ سارے اچھائی کی بات کرتے ہیں لیکن عملی طور پر برائی کر رہے ہوتے ہیں۔کہتے کچھ ہیں کرتے کچھ ہیں قرآن کریم غور فکر کی دعوت دیتا ہے پھر بھی ہم اندھے پن کا مظاہرہ کرتے ہیں۔اتنی خرابی کے باوجود ہم یہ نہیں کہہ سکتے کہ صاحب ایمان لوگ نہیں رہے ایسے لوگوں کی وجہ سے تو دنیا قائم ہے۔اللہ کریم نے ایک بار پھر موقع عطا فرمایا ہے کہ اس رمضان المبارک کو غنیمت جانیے اور اس کی رحمت کے طالب بنیے تلاوت قرآن کریم سے اپنی زبانوں کو تر کیجیے،اس وقت کو ضائع مت کیجیے۔اور اپنے دل کھول کر اللہ کی بارگاہ میں رکھ دیجیے۔اپنے کاسۂ دل کو سیدھا کیجیے اور رحمت باری سے بھریے۔اللہ کریم صحیح شعور عطا فرمائیں۔
  آخر میں انہوں نے ملکی سلامتی اور بقا کی اجتماعی دعا بھی فرمائی
Ramadaan al mubarak ko ghanemat jaaniye aur is ki rehmat ke taalib banin - 1

ہمارے اعمال اور اللہ کریم کی عطا

Watch Hamare Aamal aur Allah Kareem ki Ataa YouTube Video

دنیا کا نظام اللہ کریم نے عدل پر قائم رکھا ہوا ہے


  رمضان المبارک بندہ مومن کو زندگی میں ایک بار پھر عطا ہو رہا ہے جو کہ اللہ کریم کا بہت بڑا احسان اور رعایت ہے۔ہم اس ماہ مبارک میں اپنے اعمال کا جائزہ لیں اور اس کی مبارک ساعتوں میں پُر خلوص ہو کر صرف اللہ کی رضا کے لیے عبادات کریں۔آج ہماری نافرمانیوں کے باوجود اللہ نے ہمیں پھر مہلت دی ہے کہ اس میں اجرو ثواب کو کئی گنا بڑھا دیا جاتا ہے ہم سب اس کی برکات کو دیکھتے ہوئے اس کے منتظر نظر آئیں۔
 امیر عبدالقدیرا عوان شیخ سلسلہ نقشبندیہ اویسیہ و سربراہ تنظیم الاخوان پاکستان کا جمعتہ المبارک کے روز خطاب۔
  انہوں نے کہا کہ دنیا کا نظام اللہ کریم نے عدل پر قائم رکھا ہوا ہے۔عدم توازن سے کوئی شئے اپنا وجود قائم نہیں رکھ سکتی۔جب دنیا میں فساد بڑھتا ہے تو اللہ کریم ایسی مخلوق پیدا فرما دیتے ہیں جنہیں اللہ محبوب رکھتا ہے اور وہ اللہ کو محبوب رکھتے ہیں۔ہر شئے اللہ کا ذکر کرتی ہے جو مخلوق اللہ کا ذکر چھوڑ دے وہ فنا ہوجاتی ہے۔دارِ دنیا کی زندگی ہمارے دم سے ہے یہ سمجھ لینا درست نہیں ہے۔ہم نہیں تھے تو یہ دنیا قائم تھی ہم نہ ہوں گے تب بھی یہ نظام چل رہا ہوگا۔یہ دنیا نیکی کرنے والوں کی وجہ سے قائم ہے جب تک اللہ اللہ کرنے والا ایک بھی موجود ہے یہ دنیا قائم رہے گی۔
  انہوں نے مزید کہا کہ اسلام کے نام پر بننے والے ملک میں بھی تحفظ نبوت کی ضرورت پیش آرہی ہے۔آپ ﷺ کی بعثت سب سے آخر میں ہوئی۔آپ ﷺ کی ذات اقدس نبوت کی عمارت کی تکمیل ہے۔دعا ہے کہ اللہ کریم ایسے لوگ پیدا فرمائیں جو ہماری تربیت کا سبب بنیں ہمارے گناہ ایسے ہیں کہ ہم اس معاشرے کی برائی کا مقابلہ نہیں کر پا رہے۔بڑی بڑی قومیں ان کے اعمال کی وجہ سے تباہ کر دی گئیں۔آج ہمارے معاشرے میں وہ ساری برائیاں موجود ہیں لیکن نبی کریم ﷺ کی بعثت کے صدقے اجتماعی عذاب ختم کر دئیے گئے۔
اللہ کریم ہمیں صحیح شعور عطا فرمائیں۔ آخر میں انہوں نے ملکی سلامتی اور بقا کی اجتماعی دعا بھی فرمائی
Duniya ka nizaam Allah kareem ne Adal par qaim rakha Hua hai - 1

حکم الہی اور آج کا مسلمان (ماہانہ اجتماع دارالعرفان منارہ)


حکم الہی اور آج کا مسلمان (ماہانہ اجتماع دارالعرفان منارہ)

Watch Hukme Ilahy Aur Aj ka Muslman (Mahana Ijtima Dar ul Irfan Munarah) YouTube Video

آخرت پر یقین،دنیا کی زندگی پر اس درجے کا اثر پیدا کرتا ہے کہ اعمال درست ہو جاتے ہیں


 ہمارے کسی اچھے اقدام سے معاشرے پر کیا اثر پڑتا ہے ہم اس کے مکلف نہیں ہیں۔نتائج اللہ کریم کے دستِ قدرت میں ہیں ہم صرف تعمیل حکم کے مکلف ہیں اور یہی تعمیل حکم ہمیں اللہ کریم سے مزیدآشنائی عطا فرمائے گا۔اپنی عبادات پر توجہ دیں ہمارے بے کیف اور بے روح سجدے ہمارے اعمال پر ہمارے کردار پر اثرانداز نہیں ہو رہے۔یہ ہو نہیں سکتا کہ رکوع وسجود نصیب ہو اور ان کے اثرات اعمال تک نہ آئیں۔ادائیگی کے بعد اعمال درست نہیں ہو رہے تو پھر دیکھنے کی ضرورت ہے کہ اس ادائیگی میں کہاں کہاں فرق ہم کر رہے ہیں۔جب اس رشتے کو جو بندے اور اللہ کے درمیان ہے نہیں جان پائیں گے تو پھر باقی رشتوں کی پہچان کیسے کر پائیں گے۔
 امیر عبدالقدیر اعوان شیخ سلسلہ نقشبندیہ اویسیہ و سربراہ تنظیم الاخوان پاکستان کا دوروزہ ماہانہ روحانی اجتماع کے موقع پر خطاب۔
انہوں نے کہا کہ  دنیا کی روش جو ہے جیسا راہ کا انتخاب ہو گا ویسے ہی نتائج پائے گی۔آج اپنے حالات دیکھیں تو دل دکھتا ہے کہ ہر شئے ہے پھر بھی ہر شئے کے محتاج ہیں۔مسلمان بہت ہیں لیکن بندہ مومن نظر نہیں آتا۔  نیت سے عمل تک کا معاملہ درست کرنے کی ضرورت ہے۔ہم اس پر تبصرہ کرتے ہیں لیکن دوسروں کے لیے۔پورے معاشرے میں دوسروں کو مخاطب کیا جا رہا ہے اپنی ذات کی بات کوئی نہیں کر رہا۔زبانی دعوی کرنے سے بہتر ہے کہ ہمارا عمل یہ ثابت کرے کہ ہم مسلمان ہیں اور نبی کریم ﷺ کے اُمتی ہیں۔دین اسلام کی تبلیغ کا سب سے اعلٰی انداز عملی زندگی ہے۔بندہ مومن کی دنیا بھی دین ہے کیونکہ وہ اللہ کے حکم کے مطابق عمل کر رہا ہو تا ہے۔اُس کی زندگی کا کوئی معاملہ بھی بے دینی میں نہیں جاتا بلکہ دینداری میں جاتا ہے اطاعت میں جاتا ہے۔اللہ کریم صحیح شعور عطا فرمائیں۔
  آخر میں انہوں نے ملکی سلامتی اور بقا کی اجتماعی دعا بھی فرمائی
Akhirat par yaqeen, duniya ki zindagi par is darjay ka assar peda karta hai ke aamaal durust ho jatay hain - 1

خواہشات نفس کی پیروی کے نقصانات

Watch Khwahishate Nafs ki pairwi kay Nusanaat YouTube Video